عبادات - زکاة و صدقات

India

سوال # 174074

کیا فرماتے مفتیان عظام مسئلہ ذیل کے متعلق زید گزشتہ کئی سالوں سے اپنے مال کی زکوة اندازہ کر کے نکالتا رہا، اب جب اس نے ہر سال کا حساب کیا، تو معلوم ہوا کہ کسی سال ذمہ سے زیادہ اور کسی سال کم زکوة نکالی گئی ہے، ایسی صورت میں کیا زید ادا کی گئی ایک سال کی زکوة دوسرے سال میں جوڑ کر حساب برابر کر سکتا ہے؟ خیرا

Published on: Nov 2, 2019

جواب # 174074

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 212-149/B=02/1441



صورت مذکورہ میں جس سال کم زکاة نکالی ہے، زیادہ نکالی ہوئی زکاة کو اس میں نہیں جوڑ سکتے ہیں بہرحال ہر سال کی زکاة پوری پوری نکل جانی چاہئے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات