India

سوال # 178031

حیض کی حالت میں اپنی بیوی سے اس طرح لذت حاصل کر سکتے ہیں کہ عورت کے کسی حصے سے مثلا پنڈلی یا پستان یا پیٹھ سے شرمگاہ کو مس کرکے انزال کر دے ؟ اس طرح سے انزال کرنا کیسا ہے ؟

Published on: May 2, 2020

جواب # 178031

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 753-617/D=09/1441



حالت حیض میں عورت کے ناف کے نیچے اور گھٹنے کے اوپر بدن کے حصہ سے ہاتھ وغیرہ کسی ذریعہ بھی بلاحائل استمتاع کرنا جائز نہیں ہے، اور ناف اور گھٹنے کے مابین کے علاوہ بدن کے دوسرے حصے سے بلاحائل بھی استمتاع کرنا جائز ہے۔ پس صورت مسئولہ میں مذکور طریقوں سے شوہر کا عورت سے جماع کرنا جائز ہے۔ قال الشامی: فیجوز الاستمتاع بالسّرة وما فوقہا والرکبة وما تحتہا ولو بلا حائل ، وکذا بما بینہما بحائل بغیر الوطأ ۔ (شامی: کتاب الطہارة: مطلب: لو أفتی مفت بشیء من ہذہ الأقوال فی مواضع الضرورة طلبا للتیسیر کان حسنا: ۱/۴۸۶)



البتہ بدون شدید مجبوری کے مادہ منویہ کو ضائع کرنا برا ہے۔ قال فی الدر: ولو مکن امرأتہ أو أمتہ من العبث بذکرہفانزل کرہ ولا شیء علیہ قال الشامی تحت قولہ: کرہ الظاہر انما کراہة تنزیہ لان ذالک بمنزلة ما انزل بتفخیذ او تبطین وقولہ لا شیء علیہ أی من حد وتعزیر وکذا من إثم ۔ (الدر مع الرد: ۶/۳۸۱)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات