India

سوال # 175960

گاؤں میں ایک نئی مسجد تعمیر کی گئی اور اس میں صرف ۳ وقتوں کی نماز ہوتی ہے بقیہ دو وقتوں میں مسجد میں تالا لگا ہوا ہوتا ہے کیا ایسا کرنا درست ہے جبکہ جماعت نہ کرنے کی کوئی وجہ بھی نہیں ہے ۔

Published on: Feb 6, 2020

جواب # 175960

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:396-325/sd=6/1441



دو وقتوں میں مسجد میں جماعت کیوں نہیں ہوتی ہے؟ مسجد کو آباد رکھنا چاہیے اور مسجد کی آبادی یہ ہے ا سمیں پانچوں وقت کی نمازیں جماعت کے ساتھ اہتمام سے اداء کی جائیں ، بغیر کسی شرعی عذر کے مسجد میں جماعت قائم نہ کرنا اور مسجد کو خالی چھوڑکر گھر میں نماز پڑھنا سخت گناہ ہے، گاوٴں والوں کو چاہیے کہ بقیہ دو وقتوں میں بھی مسجد میں جماعت قائم کریں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات