عقائد و ایمانیات - تقلید ائمہ ومسالک

Pakistan

سوال # 169255

حدیث میں ہے کہ فاتحہ رب اور بندے کے درمیان تقسیم ہے ، نمازی کے ہر آیت پڑھنے پر اللہ تعالیٰ کی طرف سے جواب آتا ہے ۔ سوال یہ ہے کہ جس شخص نے ساری زندگی صرف فرض نماز با جماعت ادا کی ہے وہ کیسے اس حدیث کا مصداق بن سکتا ہے کیونکہ ہم تو امام کے پیچھے فاتحہ نہیں پڑھتے ۔

Published on: Mar 11, 2019

جواب # 169255

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 785-657/H=07/1440



حدیث شریف میں ہے کہ امام کی قرأت مقتدی کی قرأت ہے اللہ تعالی کی طرف سے جو جواب آتا ہے وہ امام کے توسط سے مقتدیوں کے حق میں بھی جواب ہوتا ہے اگرچہ آپ تو نہیں پڑھتے مگر جس امام کے پیچھے آپ نماز پڑھتے ہیں وہ تو پڑھتے ہیں جو شخص ساری زندگی فرض نماز پر ہی اکتفاء کرتا ہے اُس کا حال بھی عجیب ہے اللہ پاک سب کو دین کی صحیح فہم عطاء فرمائے آمین۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات