معاشرت - طلاق و خلع

India

سوال # 175449

زید اور اس کی بیوی میں کسی بات پر بہث چل رہی تھی کے زید نے غصے میں اپنی بیوی کو "ارے ہاں رے میری ماں"کہہ دیا تو اب اس کا کفارہ کیا ہوگا؟

Published on: Dec 25, 2019

جواب # 175449

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:373-301/L=4/1441



اپنی بیوی کو ماں کے الفاظ کے ساتھ مخاطب کرنا شرعاً مکروہ ہے، شوہر کو ایسا نہیں کرنا چاہئے؛تاہم بیوی کو ماں کہنے کی وجہ سے کوئی طلاق بیوی پر واقع نہیں ہوئی اور نہ ہی کسی قسم کا کفارہ شوہر پر لازم ہوا ۔



ویکرہ قولہ: أنت أمی، قال الشامی: جزم بالکراہة تبعاً للبحر والنہر، والذی فی الفتح، وفی أنت أمی لا یکون مظاہرًا، وینبغی أن یکون مکروہا۔ (شامی ۱۳۱/۵زکریا)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات