عبادات - طہارت

India

سوال # 170211

اگر صبح نیند سے بیدار ہونے کے وقت پتا چلے کہ میں ڈسچارج ہو گیا ہو تو کیسے پتا چلے گا کہ منی نکلی ہے یا مذی ؟ اور اگر مذی نکلی ہے تو کیا غسل کرنا ضروری ہے ؟

Published on: May 19, 2019

جواب # 170211

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:773-659/N=9/1440



(۱، ۲):سوکر اٹھنے کے بعد اگر کپڑے وغیرہ پر کوئی دھبہ ہو اور احتلام یاد ہو اور وہ منی یا مذی کا دھبہ ہویا اس دھبہ کے بارے میں منی اور مذی کا شک ہو یا منی اور ودی کا شک ہو یا مذی اور ودی کا شک ہو یا تینوں کا شک ہو تو ان سب صورتوں میں غسل فرض ہوگا۔ اور اگر احتلام یاد نہ ہو اور کپڑے وغیرہ کا دھبہ یقینی طور پر منی کا ہو تو بھی غسل فرض ہوگا۔ اور اگر ودی کا یقین ہو تو خواب یاد ہو یا یاد نہ ہو، بہر صورت غسل فرض نہیں ہوگا۔ اسی طرح اگر خواب یاد نہ ہو؛ لیکن دھبہ کے بارے میں مذی کا یقین ہو یا مذی اور ودی کا شک ہو تو بھی بالاتفاق غسل فرض نہ ہوگا۔ اور اگر خواب یاد نہ ہو اور دھبہ کے بارے میں منی اور مذی کا شک ہو یا منی اور ودی کا شک ہو یا تینوں کا شک ہو تو ان سب صورتوں میں حضرات طرفینکے نزدیک احتیاطاً غسل واجب ہوگا اور امام ابویوسفکے نزدیک نہیں کذا في رد المحتار(کتاب الطھارة، ۱: ۳۰۰، ۳۰۱، ط: مکتبة زکریا دیوبند) وغیرہ من کتب الفقہ والفتاوی۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات