عبادات - قسم و نذر

Pakistan

سوال # 173389

سوال ہے کہ زید اور عمر نے ایک ہوٹل پر کھانا کھایا رخصت ہونے پر زید پیسہ ادا کررہاتھا ہوٹل کے مالک کو !عمر نے کہا کہ واللہ تو نہیں ادا کریگا پیسہ لیکن زید نے ہوٹل کے مالک کو پیسہ ادا کیا تو صورت مسئوولہ میں عمر حانث ہوگا یا نہیں اگر ہوگا تو باحوالہ جواب فرمائیں۔ ہمارے ہاں یہ طریقہ بہت عام ہے۔

Published on: Oct 15, 2019

جواب # 173389

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:72-38/sd=2/1441



صورت مسئولہ میں عمر حانث نہیں ہوگا جیساکہ شامی کہ اس جزئیہ سے مستفاد ہوتا ہے : مطلب واللہ لا تقم فقام لا یحنث: ہذا ورأیت فی الصیرفیة: مر علی رجل فأراد أن یقوم فقال واللہ لا تقم فقام لا یلزم المار شیء لکن علیہ تعظیم اسم اللہ تعالی اہ وذکرہ فی البزازیة بعبارة فارسیة فہذا الفرع مخالف لما مر، وقد یجاب بأن قولہ لا تقم نہی وہو إنشاء فی الحال تحقق مضمونہ عند التلفظ بہ، وہو طلب الکف عن القیام فصار الحلف علی ہذا الطلب الإنشائی لا علی عدم القیام فالمقصود من الحلف تأکید ذلک الطلب فلیتأمل۔( رد المحتار علی الدر المختار: ۸۴۸/۳، ط: دار الفکر، بیروت) ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات