معاشرت - نکاح

India

سوال # 175975

میری بیوی حاملہ ہے اور مجھے ملنے کی خواہش ہے تو ایسی صورت میں کیا کریں؟
دوسری بات۔ کیا میں اپنے عضوخاص کو بیوی کے ہاتھوں سے پکڑ کر اپنی شہوت پوری کر سکتا ہوں؟ کیا ان کے ہاتھ کے اوپر میں اپنا ہاتھ رکھ کر اپنے عضوخاص کو ہلا کر اپنی خواہش پوری کر سکتا ہوں؟ خیرا۔

Published on: Jan 21, 2020

جواب # 175975

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:461-378/L=5/1441



(۱)حاملہ عورت سے اگر صحبت نقصان دہ نہ ہو حاملہ عورت سے وطی کرسکتے ہیں ؛البتہ نقصان دہ ہونے کی صورت میں احتیاط کرنا چاہیے۔



(۲) بیوی کے ہاتھ سے شہوت پوری کرنے کی گنجائش ہے ؛تاہم بلاضرورت بہتر نہیں۔



یحرم علی الزوج وطأ زوجتہ مع بقاء النکاح فیما إذا کانت لا تحتملہ لصغر أو مرض أو سمنة․․․ فعلم من ہذا کلہ أنہ لا یحل لہ وطو?ہا بما یو?دی إلی إضرارہا (شامی:۴/ ، کتاب النکاح، ط:زکریا دیوبند) وحل طلاقہن أی الآیسة والصغیرة والحامل عقب وطء لأن الکراہة فیمن تیحض لتوہم الحبل وہو مفقود ہنا․(درمختار مع الشامی: ۴۳۴/۴، مطبوعہ مکتبہ زکریا دیوبند)ولو مکن امرأتہ أو أمتہ من العبث بذکرہ فأنزل کرہ ولا شیء علیہ (درمختار) وفی الشامی: قولہ کرہ الظاہر أنہا کراہة تنزیہ لأن ذلک بمنزلة ما لو أنزل بتفخیذ أو تبطین (درمختار مع شامی: ۳۸/۶،ط:زکریا دیوبند)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات