عبادات - جمعہ و عیدین

india

سوال # 173856

کیا فرماتے ہیں مفتیان کرام مسئلہ ذیل میں کہ آج کل اکثر مساجد میں نماز جمعہ کا سلام پھیرتے ہی دعاسے قبل چندہ کرنے کارواج بڑھتا جارہا ہے جب تک چندہ مکمل نہیں ہوجاتا ہے تب تک نمازیوں کو دعا کے لئے مقید رکھا جاتا ہے گویا چندہ کو نماز کاجز بنادیاگیاہے ۔دریافت طلب امریہ ہے کہ اس طرح چندہ کرنا جس سے دعا میں تاخیر ہو جائے درست ہے یانہیں؟ اس مسئلے کاقرآن وحدیث کی روشنی میں شرعی فیصلہ صادر فرمائیں ۔

Published on: Oct 23, 2019

جواب # 173856

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 154-125/M=02/1441



جن فرائض کے بعد سنن و نوافل ہیں اُن میں سلام کے بعد مختصر دعا کرکے فوراً سنتوں میں مشغول ہو جانا مسنون و مستحب ہے، لہٰذا آج کل اکثر مساجد میں نماز جمعہ کے بعد دعا سے پہلے جس انداز پر چندہ کیا جاتا ہے اور چندہ مکمل ہونے تک دعا کو موقوف رکھا جاتا ہے یہ طریقہ نادرست و لائق ترک ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات