متفرقات - اسلامی نام

Pakistan

سوال # 176482

میں نے اپنی بیٹی کا نام سیدہ ابیہا فاطمہ رکھا ہے۔ ابیہا کے معنی کیا ہے؟ کیا ابہیا حضرت فاطمہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی کنیت ہے؟

Published on: Feb 16, 2020

جواب # 176482

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:566-412/sn=6/1441



”ابیہا“ نہیں ؛ بلکہ ”’ام ابیہا“ حضرت فاطمہ رضی اللہ عنہا کی کنیت تھی، اسد الغابة میں ہے : وکانت فاطمة تکنی أم أبیہا، وکانت أحب الناس إلی رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم وزوجہا من علی بعد أحدإلخ (أسد الغابة ط العلمیة 7/ 216) اگر آپ اپنی بیٹی کا نام ”ابیہا فاطمہ“ کے بہ جائے ”ام ابیہا فاطمہ “ رکھیں تو بہتر ہے۔ ”ام ابیہا“ کا معنی ہے اپنے باپ کی ماں، کسی خاص مناسبت سے یہ کنیت پڑ گئی ہوگی ؛ لیکن اس کی تفصیل متداول کتابوں میں نہیں ملتی ۔ واضح رہے کہ شروع میں” سیدہ“ کا اضافہ اسی وقت کریں جب فی لواقع آپ خاندان سادات میں سے ہوں ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات