عقائد و ایمانیات - بدعات و رسوم

pakistan

سوال # 177473

مروجہ قل خوانی سنت ہے یا بدعت؟نیز اہل حق کے کسی عالم کا اس میں شرکت کرنا کیسا ہے؟اور قل خوانی میں دیئے جانے والے خوردونوش کا کیا حکم ہے کہ حلال ہے یا حرام؟ قرآن خوانی برائے ایصال ثواب کروانی کیسا ہے؟اور قرآن خوانی برائے خیروبرکت اور کسی بیمار کی صحت یابی کی لیے کروانا کیسا ہے؟ اور ان پر طعام وغیرہ جو ملتا ہے اسے کھانا کیسا ہے؟ وضاحت فرما دیں ،نوازش ہوگی۔

Published on: Apr 21, 2020

جواب # 177473

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:737-605/L=8/1441



ایصالِ ثواب میت کے اعزاء اقرباء کو اپنے اپنے طور پر کرنا چاہیے ،مروجہ قل خوانی ثابت نہیں ،یہ بدعت ہے اور اس وقت کھانے کا نظم کرنا بھی ممنوع ہے ،اہلِ حق علماء کے لیے ایسے پروگراموں میں شرکت کرنا درست نہیں ،اسی طرح اگربغیر کسی التزام کے خیروبرکت یا صحت یابی کے لیے کچھ لوگ مل کر قرآن خوانی کردیں تو اس حد تک گنجائش ہے ؛البتہ اس میں بھی غیر ضروری چیزوں کا التزام درست نہیں ۔ وفی البزازیة : ویکرہ اتخاذ الطعام فی الیوم الاول والثالث بعد الاسبوع، ونقل الطعام الی القبر فی المواسم واتخاذ الدعوة للقراء ة القرآن وجمع الصلحاء والقرآء للختم او لقراء ة سورة الانعام او الاخلاص، والحاصل ان اتخاذ الطعام عند قراء ة القرآن لاجل الاکل یکرہ.(رد المحتار:/۳ ۱4۸،ط:زکریا دیوبند)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات