عقائد و ایمانیات - بدعات و رسوم

Bangladesh

سوال # 176840

ہمارے یہاں " ختم جلالی" کی نام سے ایک معمول جاری ہیں جس کا طریقہ یہ ہے کہ جعفران کی سیاہی سے کاغذ پر سوا لاکھ مرتبہ لفظ اللہ لکھاجاتاہے اسکے بعد ہر ایک لفظ کو ٹکڑے ٹکڑے کرکے آٹے کی گولی بناکر (بناتے وقت سب ملکر دواء یونس پڑھتے ہے) اسکو دھوپ میں سوکھاکر سمندر میں مچھلی کی خوراک کی حیثیت سے ڈاھالا جاتا ہیں۔بہت سے لوگ اپنی مصائب سے نجات پانے کیلئے عمل کرکے دعا کراتے ہیں۔اس عمل کی شرعی حیثیت کیا ہیں؟ دلائل سے وضاحت کیجئے؟

Published on: Feb 23, 2020

جواب # 176840

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 566-435/B=06/1441



یہ عمل قرآن و حدیث سے ثابت نہیں۔ ممکن ہے کسی بزرگ کا اپنا معمول ہو۔ ہمیں وہ عمل اختیار کرنا بہتر ہے جو قرآن و حدیث سے ثابت ہو۔ مثلاً لاإلٰہ إلا أنت سبحانک إنی کنت من الظالمین پڑھنے سے مصائب سے نجات ملتی ہے۔ یا لا حول ولا قوة إلا باللہ العلی العظیم پڑھنے سے پریشانیاں، مشکلات ، مصیبتیں دُور ہوتی ہیں۔ ان دعاوٴں کا پڑھنا بہتر ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات