عبادات - حج وعمرہ

Pakistan

سوال # 176657

میں، والدہ اور بیوی نے 2016 میں عمرہ کیا۔ اب میرا اور بیوی کا حج کا ارادہ ہے۔ جب کہ اب والدہ کو ہائی بلڈ پریشر اور شوگر ہے، ان کی عمر تقریبا 78 سال ہے اور ان سے مناسب چلا بھی نہیں جاتا، سانس بھی پھولتا ہے۔ اب ہمارے لیے ان کے حج کے متعلق کیا حکم ہے کیا والدہ کو چھوڑ کر ہم حج کے لیے جا سکتے ہیں؟
مفتیان کرام واضح کریں شکریہ۔

Published on: Feb 17, 2020

جواب # 176657

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 750-573/H=06/1441



اگر والدہ صاحبہ پر حج فرض نہیں ہے اور ان کی مناسب خدمت و دیکھ بھال کے لئے آپ انتظام کرکے حج کو چلے جائیں تو کچھ حرج نہیں تاہم اگر والدہ صاحبہ پر حج فرض ہے اور وہ اپنی بیماری کے باوجود حج کے لئے جانے پر آمادہ ہیں تو بہتر یہی کہ آپ اپنے ساتھ لے جائیں اور چونکہ بیوی بھی ساتھ میں ہوں گی تو ایسی صورت میں والدہ کے لئے اداءِ مناسک اور سفر وغیرہ میں زیادہ سہولت ہوگی ان شاء اللہ تعالیٰ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات