عبادات - حج وعمرہ

India

سوال # 175683

عرض یہ ہے کہ ایک بیوہ عورت (ممانی ) اپنے بھانجے اور بھانجی کے ساتھ حج پر ازروئے شرع جاسکتی ہے یانہیں ؟مدلل جواب عنایت فرمائیں میں آپ حضرات کا شکر کزار ہوں گا۔

Published on: Dec 30, 2019

جواب # 175683

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 420-386/M=05/1441



اگر مذکورہ عورت ممانی ہے تو پھر وہ بھانجہ، عورت کے شوہر کا ہوگا، اور شوہر کا بھانجہ، بیوی کے لئے محرم نہیں ہوتا، پس عورت کو نامحرم کے ساتھ حج کے لئے جانا جائز نہیں اور اگر وہ بھانجہ عورت کا حقیقی بھانجہ ہے تو پھر عورت خالہ ہوئی اور خالہ و بھانجہ کے درمیان محرمیت کا رشتہ ہے لہٰذا اِس صورت میں عورت اپنے حقیقی بھانجے کے ساتھ حج کے لئے جاسکتی ہے بشرطیکہ بھانجہ جوان ہو اور کسی فتنہ کا اندیشہ نہ ہو۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات