عبادات - حج وعمرہ

India

سوال # 173240

اگر میں حج تمتع کا ارادہ کروں ، اور اگر میں تین ذی الحجہ کو میرے شہر اورنگ آباد سے روانہ ہورہا ہوں تو کیا عمرہ کے بعد میں حج کے ایام کے پہلے حالت احرام میں نفل طواف کرسکتاہوں؟ یا پھر مجھے احرام کی حالت میں نفل طواف نہیں کرنا چاہئے کیوں کہ ابھی حج کے ایام کے لیے تین دین باقی ہیں؟

Published on: Oct 9, 2019

جواب # 173240

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 62-34/D=01/1441



صورت مسئولہ میں حج کے ایام سے پہلے حالت احرام میں نفل طواف کر سکتے ہیں، اس میں کوئی حرج نہیں، کیونکہ نفل طواف کے لئے کوئی وقت اور زمانہ کی قید نہیں۔ (مستفاد من معلم الحجاج، ص: ۱۳۱)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات