عقائد و ایمانیات - حدیث و سنت

India

سوال # 175330

میرے خالو اور خالہ اور دیگر کچھ لوگ میری داڑھی فکا مذاق اڑاتے اور برا بھلا کہتے ہیں ، میری ایک نماز چھوٹنے سے بولتے ہیں کہ پہلے اپنے دل کو بناؤ اور پھر داڑھی رکھو ، شادی کے بعد داڑھی رکھو، اس وجہ سے میں ان سے زیادہ ملنا چھوڑدیا ہے، غرض سے زیادہ فون پر بھی بات نہیں کرتا، اور نہ جانے آج کل اکثر و بیشتر ہر انسان مجھے الگ نظریہ سے دیکھتا ہے، مجھے ناپسند کرتاہے ، جب کہ وہ خود مسلمان ہے ، ایسے میں مجھے کیا کرنا چاہئے؟

Published on: Dec 25, 2019

جواب # 175330

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:318-270/N=4/1441



جو لوگ داڑھی کا یادین کی کسی بھی بات کا مذاق اڑاتے ہیں، وہ ایسے ہی لوگ ہیں، جنھیں دنیا کی زیادہ فکر ہے، آخرت کی کم یا بالکل نہیں؛ لہٰذا آپ ایسے لوگوں کے نا زیبا تبصروں یا جاہلانہ مذاق سے پریشان نہ ہوں؛ بلکہ ان کے لیے دعائے خیر ہی کریں۔ اور اگر ان کی تبصرہ بازی زیادہ تکلیف دہ ہو تو ایسے لوگوں سے ملنا جلنا کم کردیں۔ اور خدارا آپ کسی کے بہکاوے میں آکر داڑھی نہ منڈائیں اور نہ ایک مشت سے چھوٹی کرائیں۔اور رہی رشتہ کی بات تو داڑھی والوں کا بھی رشتہ آتا ہے؛ بلکہ بہتر اور سچے دین دار گھرانے کا آتا ہے؛ لہٰذا اِس کی فکر نہ کریں اور نمازوں کا بھی خاص اہتمام کریں۔ اللہ تعالی آپ کو فلاح دارین سے سرفراز فرمائیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات