عبادات - احکام میت

India

سوال # 3445

اسلام کے لیے جو اپنی جان دیتا ہے وہ شہید کہلاتا ہے، لیکن کیا ملک کے لیے جو جان دیتا ہے وہ بھی شہید کہلاتا ہے؟

Published on: Dec 9, 2007

جواب # 3445

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 922/ د= 884/ د


 


احادیث میں شہید دو معنی میں استعمال ہوا ہے اللہ کے راستہ میں اعلائے کلمة اللہ کی غرض سے جس نے قتال کیا وہ اول درجہ کا شہید ہے اس کے لیے حکم دنیوی یہ ہے کہ اس کو غسل نہیں دیا جائے گا، اسی کپڑے میں دفن کیا جائے گا جس میں شہید ہوا ہے اس حکم کے کچھ اور بھی شرائط اور دوسرے معنی ہیں۔ اور دوسرے معنی میں اس شخص کو بھی شہید کہا گیا ہے جو اپنی جان و مال کی حفاظت کرتے ہوئے شہید ہوا ہو، اگر مظلومانہ طور پر مارا گیا تو شہادت کا ثواب ملنے کا ذکر حدیث میں ہے، لیکن ایسے شخص کے لیے شہادت کا حکم دنیوی نہیں ہے یعنی اس کو غسل و کفن دیا جائے گا۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات