عقائد و ایمانیات - دعوت و تبلیغ

India

سوال # 172616

کیا کہتے ہیں علمائے دین قرآن اور سنّت کی روشنی میں کہ میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ ہمارے تبلیغی بھائی جماعت میں 3 دن 10 دن 40 دن یا ایک سال لگانا نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی سنّت بتاتے ہیں اور کہتے ہیں کہ یہ کشتی نوح ہے ۔جو اس میں سوار ہوگا وہ پار ہوگا ۔کیا یہ دونو باتیں صحیح ہیں ۔کیا یہ عمل نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی سنّت ہے اور کیا یہ کشتی نوح ہے ۔اس کی وضاحت کرنے کی مہربانی کریں ۔اس سے متعلق صحیح حدیث بھی بتائیں ۔ آپ کی بہت مہربانی ہوگی ۔

Published on: Sep 7, 2019

جواب # 172616

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 1258-1088/B=01/1441



نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے زمانہ میں 10 دن ، 40 دن یا تین چلہ یا ایک سال کے لئے جماعت میں نکلنے کا کوئی وجود نہیں ملتا۔ یہ سلسلہ تو حضرت مولانا الیاس سے چلا ہے جن کو 70-75 سال ہوئے ہیں پھر یہ حضور کی سنت کیونکر ہو سکتی ہے۔ جو لوگ ایسی بات کہتے ہیں ان ہی سے حوالہ معلوم کریں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات