عبادات - زکاة و صدقات

INDIA

سوال # 154128

کیا فرماتے ہیں علماء دین ومفتیان شرع متین اس مسئلے میں کہ ہمارے مدرسہ میں زكوة اور صدقات کے مد میں چاول اور دیگر کھانے کی اشیاء طلباء کیلئے آتےہہیں اور اس مدرسہ کے کھانے میں غیر مستحق لوگ بھی شامل ہوتے ہیں اب دریافت طلب دو امر ہیں ایک یہ کہ چاول کے تملیک کی شکل وضاحت کے ساتھ بتائیں دوسرے یہ کہ غیر مستحق لوگوں کے کھانے کی جواز کی صحیح شکل کیا ہوگی وضاحت فرمائیں فقط والسلام المستفتی رئیس احمد قاسمی

Published on: Sep 12, 2017

جواب # 154128

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 1349-1273/sd=12/1438



زکات اور صدقات واجبہ کی مد میں چاول اور دیگر کھانے کی اشیاء کا مصرف غریب نادار طلبہ ہیں، غیر مستحق لوگوں کو یہ اشیاء کھلانا جائز نہیں ہے ،ہاں اگر مستحق زکات طلبہ کھانا وصول کرنے کے بعد خود سے کسی غیر مستحق کو کھلانا چاہیں، تو کھلا سکتے ہیں؛ لیکن مدرسہ والوں کو براہ راست زکات کی اشیاء غیر مستحق کو دینا جائز نہیں ہے ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات