عبادات - طہارت

Pakistan

سوال # 152623

محترم مفتی صاحب : اگر اللہ اللہ کا ذکر کرتے وقت جذبہ اور وجد کی وجہ سے خودبخود احتلام ہوجائے تو شریعت کا اس بارے میں کیا حکم ہے ؟ کیا بندہ اس طرح کے وجد میں آنے سے احتیاط کرے یا گنجائش ہے ؟

Published on: Jul 17, 2017

جواب # 152623

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 953-774/D=10/1438



کبھی معدہ کی حِدّت (گرمی) کی وجہ سے احتلام ہوجاتا ہے یہاں ذکر کی وجہ سے حدت میں اضافہ ہوگیا پس احتلام کی وجہ یہ ہوئی، روحانی وجہ نہیں ہے۔



اگر اتفاقاً کبھی ایسا ہوگیا تو کوئی بات نہیں اور اگر اثر ایسا ہوتا ہو تو پھر ذکر کے معمول میں احتیاط یا تبدیلی کی ضرورت ہے، طریقہ ذکر، تعداد ذکر، وقت ذکر ہرایک میں جو مناسب ہو تبدیلی کی جائے گی اس سلسلے میں آپ اپنے شیخ سے رجوع کریں اور ان کی اجازت کے بعد ہی ذکر کا معمول بنائیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات