عبادات - صوم (روزہ )

India

سوال # 166298

میرا سوال یہ ہے کہ کیا روزہ کی حالت میں فرنچ کس (میاں بیوی کا ایک دوسرے کے ہونٹوں کا چومنا ، چوسنا یا ایک دوسرے کی زبان کو چوسنا) کرنا کیسا ہے؟ کیا روزہ ٹوٹ جائے گا یا نہیں؟

Published on: Oct 8, 2018

جواب # 166298

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 1106-1035/SN=1/1440



روزہ رکھ کر اس طرح بوسہ لینا مکروہ ہے، اگر انزال ہو جائے تو روزہ ٹوٹ جائے گا اور قضا لازم ہوگی، اگر چوستے ہوئے بیوی کا لعاب نگل جائے تو اس سے بھی روزہ ٹوٹ جائے گا گو انزال نہ ہو اور اس صورت میں قضا کے ساتھ ساتھ کفارہ بھی لازم ہوگا، ہاں اگر فرنچ بوسہ کے نتیجے میں نہ انزال ہو اور نہ ہی بیوی کا لعاب حلق میں جائے تو روزہ ٹوٹنے کا حکم نہ ہوگا؛ لیکن روزہ رکھ کر ایسا کرنا بہرحال مکروہ ہے۔ أو وطیٴ امرأة میتةً ․․․․ أو قبل ولو قبلة فاحشة ․․․․․․ فأنزل، قید للکل ، حتی لو لم ینزل کما یفطر کما مرّ (درمختار مع الشامی: ۳/۳۷۸، ط: زکریا) ولو ابتلع بزاق غیرہ فسد صومہ بغیرکفارة إلا إذا کان بزاق صدیقہ فحینئذ تلزمہ الکفارة (ہندیہ: ۱/۲۶۵، ط: زکریا) ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات