عبادات - صلاة (نماز)

Pakistan

سوال # 174991

عورت اور مرد کی نماز میں کیا کیا فرق ہے یا عورت نماز کس طرح ادا کریے گی اور مرد کس طرح نماز ادا کرے گا نیت باندھنا رکوع۔سجدہ۔قعدہ۔جلسہ ۔وغیرہ عورت کی نماز کا کس طرح نماز ادا کرنا کس جگہ بیان ہے حدیث کی رو سے بتائیں ۔

Published on: Nov 27, 2019

جواب # 174991

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 319-281/M=03/1441



عورت تکبیر تحریمہ کے وقت اپنے دونوں ہاتھ کندھے تک اٹھائے اور سینے پر ہاتھ باندھ لے، اور مرد اپنے دونوں ہاتھ کان کے لو تک اٹھائے اور ناف کے نیچے باندھے۔ رکوع میں عورت دونوں ہاتھ کی انگلیاں ملاکر گھٹنے پر رکھے اور دونوں بازو، پہلووٴں سے ملائے رکھے، اور مرد رکوع میں انگلیاں کھلی رکھے اور اپنے گھٹنے پکڑلے، اور عورت سجدے میں پیٹ کو رانوں سے ملاکر کہنیوں کو زمین پر بچھا کر اور بازوٴں کو پہلووٴں سے ملاکر رکھے یعنی خوب سمٹ کر سجدہ کرے اور مرد خوب کھل کر سجدہ کرے یعنی پیٹ کو رانوں سے اور بازوٴں کو پہلووٴں سے جدا رکھے، پہلے سجدہ کے بعد خوب اچھی طرح بیٹھ جائے تب دوسرا سجدہ کرے، عورت سجدے میں مردوں کی طرح قدمین کو کھڑا نہیں کرے گی بلکہ تورک کی حالت میں قبلہ کی طرف کرے اور قعدہ میں بھی عورت تورک کرے یعنی سرین پر بیٹھے اور اپنے دونوں پاوٴں داہنی طرف نکال دے جب کہ مرد قعدے میں بایاں پیر بچھاکر بیٹھ جائے اور دائیں پیر کو کھڑا رکھے، یہ سب مسائل حدیث و فقہ کی نصوص سے ثابت ہیں حوالے کے لئے ان کتابوں کی طرف مراجعت کر سکتے ہیں، مصنف عبد الرزاق ، مصنف ابن ابی شیبہ ، شامی، بدائع، البحر، وبہشتی زیور وغیرہ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات