عبادات - صلاة (نماز)

Uk

سوال # 173762

ایک امام اپنی پیٹھ میں تکلیف کی وجہ سے صحیح سے رکوع نہیں کرسکتا نیز گھٹنے میں درد کی وجہ سے صحیح سے بیٹھ نہیں سکتاتو کیا اس سے ان کی اور دیگر مصلیوں کی نماز پر کوئی اثر پڑے گا؟ براہ کرم، رہنمائی فرمائیں۔

Published on: Oct 15, 2019

جواب # 173762

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 158-125/H=02/1441



پیٹھ میں تکلیف اور گھٹنے میں دَرد کی وجہ سے تندرست آدمی کی طرح رکوع نہ کر سکے اور صحیح سے نہ بیٹھ سکے لیکن رکوع سجدہ کے ساتھ نماز پڑھے اور پڑھائے تو ایسے شخص کی خود اپنی نماز بھی اور اس کی اقتداء میں مقتدیوں کی نماز بھی درست ہو جاتی ہے یہ تکلیف اور دَرد مانع صحت اقتداء نہیں ہے؛ البتہ تکلیف و دَرد کے ختم ہونے تک کوئی تندرست آدمی نماز پڑھا دیا کرے تو بہتر ہے جب کہ وہ تندرست آدمی اوصافِ امامت سے متصف ہو۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات