عبادات - صلاة (نماز)

UP

سوال # 164845

اگر امام فجر کی نماز میں سجدہ تلاوت پڑھے اور سجدہ نہ کرے اور نماز مکمل کر لے تو اس نماز کا کیا حکم ہے ؟اور اگر امام مسلسل لمبی نماز پڑھاتے قرآت مسنون کو چھوڑ کرتو یہ درست ہے اور امام کو فرض نماز کے بعد لمبی دعا کا مسلسل اہتمام کرنا کیسا ہے ؟

Published on: Sep 11, 2018

جواب # 164845

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1421-1086/B=12/1439



اگر امام نے نماز میں آیت سجدہ پڑھی اور سجدہٴ تلاوت نہیں کیا تو اب نماز کے بعد میں اس کی تلافی کی کوئی صورت نہیں، بس توبہ واستغفار کرے اس کے سوا اور کوئی تلافی نہیں ہے، امام کے لیے قراء ت مسنونہ چھوڑکر لمبی لمبی قراء ت کرنا درست نہیں، تمام مقتدیوں کا خیال رکھنا ضروری ہے اس لیے فرض نمازوں کے بعد بہت مختصر سی دعا اللہم انت ومنک السلام کہہ کر مانگ لے، زیادہ لمبی دعا مانگنا مکروہ ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات