معاشرت - اخلاق و آداب

India

سوال # 166381

قبلے کی طرف پیر کرنے سے آدمی مردود الشہادت ہو جاتا ہے جیسا کہ شامی میں ہے، کیوں؟ کیا اس میں تخفیف ہو سکتی ہے؟

Published on: Jan 13, 2019

جواب # 166381

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 270-473/B=05/1440



خانہ کعبہ کے احترام اور اس کی تعظیم میں یہ ادب بتایا گیا ہے کہ خانہ کعبہ کی طرف پاوٴں پھیلاکر نہ بیٹھنا چاہئے یہ خانہ کعبہ کی تعظیم کے خلاف ہے، اگر کوئی قصداً جان بوجھ کر قبلہ کی طرف پاوٴں پھیلاتا رہتا ہے تو اس کو بعض فقہاء نے مردود الشہادة کہا ہے۔ یہی مفتی بہ قول ہے اگر کوئی بھولے سے یا بے خیالی میں پھیلاتا ہے تو یہ معاف ہے قصداً پاوٴں پھیلانے کی صورت میں اسے توبہ و استغفار کرلینا چاہئے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات