India

سوال # 165031

ایک بکرا ہے جس کے اوپر والے ہونٹ کا آدھا حصہ کٹاہوا ہے کیا اس بکرے کی قربانی درست ہے ؟ یا یہ عیب مانع جوازقربانی ہے ؟ بکرے کو اس کی وجہ سے چرنے اور پانی پینے میں کوئی دقت پیش نہیں آتی با حوالہ جواب عنایت فرما کر شکریہ کا موقع عنایت فرمائیں ۔

Published on: Sep 23, 2018

جواب # 165031

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 1434-1327/M=1/1440



صورت مسئولہ میں اگر بکرے کو اس کی وجہ سے چرنے اور کھانے پینے میں کوئی دقت و پریشانی نہیں ہوتی ہے تو اس کی قربانی درست ہے۔ لو کانت الشاة مقطوعة اللسان ہل تجوز التضیحة بہا؟ فقال نعم إن کان لایخل باالاعتلاف ۔ وإن کان یخل بہ لاتجوز التضیحة بہا (ہندیہ: ۵/۲۹۸)۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات