متفرقات - دیگر

India

سوال # 168453

آپ سے گذارش یہ ہے کہ ہمارے بہت نزدیکی رشتہ دار ہیں جو الگ خیال رکھتے ہیں جو اکثر نیاز کا کھانا اورعید میلاد النبی کے دن کھانے کی دعوت دیتے ہیں جس کا شریعت سے کوئی لینا دینا نہیں ، اس معاملے کیا کیا جائے؟ منع کرنے پر ان کا دل دکھتاہے اور جانے سے شریعت کا حکم ٹوٹتاہے تو آپ سے گذارش ہے کہ شریعت کی روشنی میں اس کا حل بتائیں۔

Published on: Feb 10, 2019

جواب # 168453

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 589-524/M=06/1440



نیاز (فاتحہ) کرانا اور عید میلاد النبی منانا شرعاً ثابت نہیں، ایسے کھانوں کی دعوت قبول کرنے سے معذرت کر دینی چاہئے، اور حسب موقع و استطاعت ایسی چیزوں پر نکیر بھی کرنی چاہئے اور اس کا خیال نہ کرنا چاہئے کہ منع کرنے سے ان کا دل دکھے گا کیونکہ کسی کا دل دکھانا مقصود نہیں، مقصد شریعت پر عمل کرنا ہے اور شریعت پر عمل کرنے سے کسی کا دل دکھتا ہو تو اس کی پرواہ نہیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات