متفرقات - دیگر

India

سوال # 167679

کبھی ایسا ہوتا ہے کہ مسجدوں میں نماز کے بعد درس کا اہتمام کیا جاتا ہے اور مغرب یا عشا کے بعد جلد ہی درس شروع ہو جاتا ہے ، حالاں کہ کچھ لوگ نماز پڑھ رہے ہوتے ہیں تو کیا اس صورت میں درس دینے میں کچھ حرج ہے ؟ اور کبھی نماز کے بعد درس شروع ہوتا ہے مگر کچھ لوگ جن کی نماز چھوٹ جاتی ہے وہ بعد میں آکر پڑھتے ہیں تو کیا اس صورت میں بلند آواز سے درس دینا صحیح ہے ؟ جو بہتر صورت بیان فرمائیں۔

Published on: Jan 3, 2019

جواب # 167679

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:370-304/sd=4/1440



 نماز کے بعد جب لوگ سنتوں سے فارغ ہوجائیں ، تب ہی درس شروع کرنا چاہیے ، فورا ہی درس شروع کرنا جس سے نمازیوں کی نماز میں خلل ہو، درست نہیں ہے ، ہاں اگر کسی کو لمبی نوافل پڑھنی ہیں یا چھوٹی ہوئی نماز اداء کرنی ہے ، تو درس کے حصے سے ہٹ کر مسجد کے ایک طرف جہاں درس کی آواز نہ آتی ہو یا کم آتی ہوپڑھ سکتا ہے ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات