متفرقات - دیگر

india

سوال # 167347

معزز علمائے کرام فتوی اور تقوی کہتے کس کو ہے ؟ اور ان دونوں میں فرق کیا ہے ؟ ہمیں ان دونوں میں سے کس پر عمل کرنا چاہیے ؟

Published on: Jan 9, 2019

جواب # 167347

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 412-399/M=05/1440



تقوی ، اللہ تعالی کے اوامر و نواہی کو بجا لانے اور اس کی معصیت اور ناراضگی والے کاموں سے بچنے کا نام ہے۔ اور فتوی، حکم شرعی کو سائل کے لئے دلیل شرعی سے واضح کرنے کا نام ہے۔ والفتویٰ فی الاصلاح: تبیین الحکم الشرعی، عن دلیل لمن سأل عنہ (موسوعہ فقہیہ، ج: ۳۲/ ۲۰) اما فی اصطلاح الفقہاء فإن التقوی والتقی خصا باتقاء العبد للہ تعالی بامتثال أمرہ واجتناب نہیہ والخوف من ارتکاب مالا یرضاہ، ج: ۱۳/۱۸۵۔ تقویٰ؛ یہ عزیمت کا درجہ ہے اور فتوی رخصت کا درجہ ہے، ہمیں تقوی پر عمل کرنے کی کوشش کرنی چاہئے اگر تقوی پر عمل نہ ہوسکے تو فتوی پر ضرور عمل کرنا چاہئے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات