متفرقات - دیگر

India

سوال # 153199

بندہ کا سوال یہ ہے کہ آج کل لائیو (live)براہ راست نشر کرنا )بہت چلتا ہے کیا یہ مطلقاً جائز ہے ؟یا کچھ قیود بھی ہیں؟ذزرا دارالعلوم کا موقف لائیو اور ویڈیو کے متعلق مفصلا ًواضح کیجیے ۔ عین نوازش ہوگی۔

Published on: Jul 11, 2017

جواب # 153199

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 865-709/D=10/1438



جو پروگرام براہ راست نشر کیے جاتے ہیں یا ویڈیو میں محفوظ کیے جاتے ہیں تصویر کشی دونوں میں پائی جاتی ہے، لہٰذا اگر ذی حیات کا پروگرام نشر کیا گیا یا ویڈیو بنائی گئی تو دارالعلوم کے موقف کے مطابق وہ ناجائز ہے، یہاں سے ناجائز ہونے کا فتویٰ دیا جاتا ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات