عبادات - قسم و نذر

Bahrain

سوال # 14703



میں
یہ معلوم کرنا چاہتاہوں کہ اگر کوئی شخص اپنے ہاتھ میں قرآن لیتا ہے یا اپنا ہاتھ
قرآن کے اوپر رکھتا ہے او رکہتا ہے کہ وہ ایک خاص چیز نہیں کرے گا (مثلاًفلاں جگہ
نہیں جائے گا)، لیکن اللہ کی قسم نہیں کھاتا ہے۔ تو کیا اب وہ شخص وہ چیز کرسکتاہے
(یعنی اس جگہ جاسکتاہے) یا نہیں جاسکتاہے؟ کیا قرآن پر ہاتھ رکھ کرکے کچھ کہنا
اللہ کی قسم کھانے جیسا ہے ، یا ہم اب بھی وہ چیز یا کام کرسکتے ہیں؟



Published on: Jul 23, 2009

جواب # 14703

بسم الله الرحمن الرحيم



فتوی:
1202=1202/م



 



صورت
مذکورہ میں قسم منعقد نہ ہوگی، جب تک قسم کے الفاظ مثلاً اللہ کی قسم، قرآن کی قسم
وغیرہ زبان سے نہ کہے، صرف قرآن ہاتھ میں لے کر یا قرآن پر ہاتھ رکھ کر کسی کام کے
کرنے یا نہ کرنے کے بارے میں کہنے سے قسم نہیں ہوتی، اور اس کے خلاف کرنے پر کفارہ
نہیں۔




واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات