عبادات - قسم و نذر

Pakistan

سوال # 14259



میرے ایک دوست نے
ایک بار قسم کھائی [میں اللہ، اپنے والدین اور تمام انبیاء کی قسم کھاتاہوں کہ
فلاں کام نہیں کروں گا] مگر اس نے وہ کام پھر کردیا۔ ایسی صورت میں اسے ایک قسم کا
کفارہ دینا ہوگا یا کئی قسموں کا؟



Published on: Jul 1, 2009

جواب # 14259

بسم الله الرحمن الرحيم



فتوی: 1072=1072/م



 



غیر اللہ کی قسم
کھانا ناجائز ہے، آپ کے دوست نے اپنے والدین اور انبیاء کی قسم کھاکر گناہ کا کام
کیا، اس کو اللہ سے معافی مانگنی چاہیے اور آئندہ اس طرح کی قسم کھانے سے احتیاط
کرنی چاہیے، البتہ اللہ کی قسم منعقد ہوگئی اور صورت مسئولہ میں آپ کے دوست کو صرف
ایک قسم کا کفارہ دینا ہوگا۔




واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات