عقائد و ایمانیات - اسلامی عقائد

Pakistan

سوال # 50590

قاری طیب صاحب اور قاری مقبول صاحب نے سفر نامہ لاہوراور عالم برزخ کتاب میں حکیم الامت اشرف علی تھانوی صاحب کے لاہور جانے کا واقعہ بیان فرمایا ہے جس میں حضرت علی حجویری کو لکھا ہے داتا گنج بخش، کیا داتا گنج بخش کہنا جائزہے؟ملفوظات حکیم الامت اور افادات یومیہ میں شیخ عبد القادر جیلانی کو غوث اعظم کئی بار لکھا ہواہے، کیا کسی والی کو غوث اعظم کہہ سکتے ہیں ، براہ کرم، جواب دیں۔

Published on: Jan 29, 2014

جواب # 50590

بسم الله الرحمن الرحيم

Fatwa ID: 457-384/B=3/1435-U

”داتا گنج“ کے معنی خزانوں کا لٹانے والا، مراد اس سے اللہ تعالیٰ ہے، اس کے آگے بخش لگانے کے بعد حاصل یہ نکلا ”اللہ بخش“ غالباً حضرت شیخ علی ہجویری اسی لقب کے ساتھ مشہور تھے، اس لیے اس نام میں کوئی حرج نہیں، اور غوث کا لفظ عرف میں قطب اور بہت بڑے ولی کے لیے بولا جاتا ہے، اس لیے اونچے مقام والے ولی کو غوث بھی کہہ سکتے ہیں۔
اہل بدعت غوث کو اپنا حاجت روا اور اپنا مدد گار سمجھتے ہیں، اس مفہوم میں لکھنا بولنا درست نہیں۔

واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات