عقائد و ایمانیات - اسلامی عقائد

?????

سوال # 174924

کیا زندوں کے نام کا ہم طواف کر سکتے ہیں مولانا مکّی حجازی صاحب کہتے ہیں کہ زندوں کا طواف نہیں ہوتا مفتی صاحب میں نے بہت زندوں کا طواف کیا ہے اور عمرہ بھی اب کیا حکم ہے تفصیل سے جواب دیں اللّٓہ آپ کے علم کو سارے عالم میں عام کرے اور آپ حضرات کو اللہ ہمیشہ سلامت رکھے آمین۔

Published on: Nov 24, 2019

جواب # 174924

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:398-327/H=3/1441



زندوں کی طرف سے طواف کرنے یعنی طواف کرکے زندوں اور مُردوں کو ثواب پہنچادینا درست ہے، آپ نے زندوں کی طرف سے جو طواف وعمرے کیے وہ سب صحیح ہوگئے اور جن کو ثواب پہنچایا اُن کو ثواب پہنچا، اور آئندہ پہنچائیں گے تو وہ بھی پہنچے گا ان شاء اللہ تعالی۔



الأصل أن کل من أتی بعبادة مّا لہ جعل ثوابہا لغیرہ وإن نواہا عند الفعل لنفسہ لظاہر الأدلة اھ در مختار وفي شرحہ الفتاوی رد المحتار (قولہ بعبادة ما) أي سواء کانت صلاة أو صوما أو صدقة أو قراء ة أو ذکرا أو طوافا أو حجّا أو عمرة أو غیر ذلک ا ھ․․․ (قولہ لغیرہ) أي من الأحیاء والأموات بحر عن البدائع اھ ج۲/۲۳۶، مطبوعہ نعمانیہ (أول باب الحج عن الغیر فی کتاب الحج)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات