عقائد و ایمانیات - اسلامی عقائد

India

سوال # 168563

اگر کوئی شادی شُدہ مرد/عورت یہ کہے کہ میں شریعت کو نہیں مانتا تو اُس کے بارے میں کیا حکم ہے ؟کیا اس طرح کے الفاظ سے شرعی اعتبار سے ازدواجی زندگی متاثر ہوتی ہے ؟

Published on: Feb 18, 2019

جواب # 168563

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:478-415/sd=6/1440



 اگر کوئی مرد یا عورت توہین کے ارادے سے کہے کہ میں شریعت کو نہیں مانتا، تو بلا شبہہ اس سے ایمان سلب ہوجائے گا اور تجدید ایمان و نکاح ضروری ہوگا؛ البتہ اگریہ جملہ کسی کے جواب میں کہے ، تو اس میں یہ تاویل ہوسکتی ہے کہ تمہارے کہنے سے نہیں مانتا، ایسی صورت میں کفر کا حکم تو نہیں ہوگا، تاہم توبہ استغفار لازم ہوگا، حاصل یہ ہے کہ جو شخص یہ جملہ بولے ، اُس کی تفصیلات ، پوری گفتگو سیاق سباق کے ساتھ سامنے آنے کے بعد ہی تعیین کے ساتھ شرعی حکم لکھا جاسکتا ہے ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات