عقائد و ایمانیات - اسلامی عقائد

India

سوال # 166401

اگر کوئی شخص ایسا گانا گالے جس میں شرک ہو۔ یا اس کے منہ سے اچانک نکل جائے جیسے ”یارا تیری یاری کو میں نے تو خدا مانا“ ، یا ایسے جیسے سجدے میں سر جھکتا ہے یارا میں کیا کروں ، ․․․․․․ تو کیا ایسا گانا گانے سے آدمی ایمان سے نکل جاتا ہے؟ کیا اسے پھر سے کلمہ پڑھنا پڑتا ہے؟
براہ کرم، وضاحت فرمائیں۔

Published on: Nov 28, 2018

جواب # 166401

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 136-131/SN=3/1440



سیاق و سباق کے ساتھ پورا گانا لکھنا چاہئے تھا؛ تاکہ مدلول متعین کرنے میں آسانی ہوتی؛ بہرحال اپنے کسی محبوب وغیرہ کو مخاطب بناکر اس طرح کے الفاظ کہنا یا کسی کا انہیں دہرانا بڑا خطرناک ہے، جس کسی نے ایسا کیا اسے توبہ و استغفار کے ساتھ ساتھ تجدید ایمان بھی کرنی چاہئے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات