معاملات - سود و انشورنس

India

سوال # 172551

کھیت کی فصل کا بیما کرانا کیسا ہے؟ اگر اس نیّت سے بیما کرائے کہ جو بھی پیسہ آگا اسے خود استعمال کرنے کی بجائے کسی مستحق کو بغیر ثواب کی نیت سے دیں گے ۔

Published on: Sep 3, 2019

جواب # 172551

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 1230-1072/B=12/1440



بیمہ پالیسی میں سود اور جوا دونوں پائے جاتے ہیں۔ قرآن میں ان دونوں کی مذمت اور برائی بیان کی گئی ہے، اسے ناپاک اور شیطانی عمل فرمایا گیا ہے، اس لئے کھیت کی فصل کا بیمہ کرانا جائز نہیں۔ کوئی شخص چوری کرے یا ڈاکہ ڈالے اس نیت سے کہ میں اسے غریبوں پر خیرات کردوں گا تو اس سے چوری ڈکیتی جائز نہ ہوگی۔ لہٰذا مستحق کو دینے کی نیت سے ایسا کرنا درست نہ ہوگا۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات