معاملات - سود و انشورنس

New delhi

سوال # 168615

کیا فرماتے ہیں علماء کرام میں اگر بینک میں رقم جمع کرتا ہوں اور ایک مدت کے بعد زیادہ ملے تو میں اس رقم سے اپنا باتھ روم یا سڑک بنوا سکتا ہوں؟

Published on: Feb 18, 2019

جواب # 168615

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 653-548/H=06/1440



نہیں بنوا سکتے اس لئے بینک سے ملنے والی سودی رقم کا حکم یہ ہے کہ وہاں سے نکال کر وبال سے بچنے کی نیت کرکے غرباء فقراء مساکین محتاجوں کو بلانیت ثواب دیدی جائے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات