عقائد و ایمانیات - بدعات و رسوم

INDIA

سوال # 175179

محترم میرا سوال یہ ہے کہ رمضان میں تراویح کے بعد اجتماعی دعا ہوتی ہے پھر کچھ جگہوں میں وتر کے بعد متصلا اجتماعی دعا کی جاتی ہے دلیل یہ دیتے ہوئے کہ رمضان میں جب وتر اجتماعی پڑھا جاتا ہے تو اجتماعی دعا کرنا صحیح ہے جس طرح فرض نمازوں کے بعد کی جاتی ہے اور دوسری دلیل جو سب سے مضبوط دیتے ہیں وہ یہ ہیکہ فتویٰ محمودیہ جلد ہفتم باب الوتر والقنوت صفحہ ۱۶۹ میں سوال جواب اس طرح ہے کہ تراویح میں وتر کے بعد امام کا بلند آواز سے اجتماعی دعا کرنا سنت ہے یا نہیں؟ الجواب حامداومصلیا یہاں بھی آہستہ مستحب ہے اس لیے جناب والا سے بہت ہی مؤدبانہ درخواست ہے کہ خاص طور پر فتویٰ محمودیہ کا حوالہ کا تحقیقی جواب دیکر دل کو مطمئن کریں۔

Published on: Dec 25, 2019

جواب # 175179

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 353-369/M=04/1441



اجتماعیت کو لازم و ضروری نہ سمجھا جائے، رمضان میں وتر کے بعد، دعا کی جاسکتی ہے اور دعا میں سرّ (آہستہ) اَولیٰ ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات