عقائد و ایمانیات - بدعات و رسوم

India

سوال # 165930

محررم کے مہینے میں جو حلیم پکاتے ہیں وہ مثال کے طورپر 10kg پکاتے ہیں اب اس 10kg میں سے وہ بس 100grm پر فاتحہ لگاتے ہیں اور وہ 100grm بنا باقی میں ملائے ایسے ہی وہ 100grm کسی کو کھلا دیتے ہیں ۔ایسے میں کیا ہم وہ حلیم کھا سکتے ہیں یا نہیں جو اس 100grm سے الگ ہے ؟

Published on: Nov 4, 2018

جواب # 165930

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 178-216/H=2/1440



محرم میں حلیم کھچڑا پکانا اور مروجہ فاتحہ لگانے کی رسم ممنوع ہے ان کا ترک لازم ہے اگرچہ فی نفسہاس حلیم پر حرام ہونے کا حکم نہیں یعنی جس حصہ پر فاتحہ لگادی یا جو بقیہ ہے کسی کا کھانا بھی حرام نہیں ہے کسی نے کھا لیا تو یہ نہ کہا جائے گا کہ اس نے حرام کھا لیا تاہم یہ رسم واجب الترک ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات