متفرقات - حلال و حرام

India

سوال # 160837

کسی طالب علم نے دسویں ایس ایس سی (10th SSC) جماعت میں چوری کی ہو، پھر اس نے انجینئرنگ کیا اس نے ا س میں چوری نہیں کی، پھر وہ ملازمت پر لگا، تو اس کی تنخواہ کے بارے میں شرعی حکم کیا ہے؟

Published on: Apr 22, 2018

جواب # 160837

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1018-873/L=8/1439



چوری کرنا تو جائز نہ تھا؛لیکن جب اس طالب علم نے انجینیئرنگ میں چوری نہیں کی اور اور جو ملازمت اس کو ملی ہے اس کو بخوبی وہ انجام دے لیتا ہے تو تنخواہ حلال ہوگی ،اس پر حرام یا ناجائز ہونے کا حکم نہ ہوگا۔لأن الأجرة بمقابلة العمل․



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات