عبادات - حج وعمرہ

India

سوال # 166766

دوسرا سوال یہ ہے اگر عورت یہا ں سے حج کے لیے اکیلی جائے اور محرم سعودی سے ہی ساتھ میں حج کرے تو کیا حج کے حقوق کی ادائیگی ہو جائے گی یا کوئی کراہت ہوگی؟ براہ ککرم، جواب دیں۔ بڑی مہربانی ہوگی۔

Published on: Nov 19, 2018

جواب # 166766

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 335-246/B=3/1440



بغیر محرم کے عورت کو حج کے لئے جانا جائز نہیں، اگر بلا محرم کے گئی تو وہ گنہگار ہوگی۔



(۲) دہلی سے جدہ تک بلا محرم کے عورت کو سفر کرنا بھی جائز نہیں وہ گنہگار ہوگی، ویسے اس طرح جانے کے بعد اگر حج کے تمام مناسک محرم کے ساتھ کر لئے تو اس کا فریضہ حج ادا ہو جائے گا لیکن وہ گنہگار ہوگی۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات