عبادات - حج وعمرہ

India

سوال # 166021

کیا فرماتے ہیں مفتیانِ کرام درج ذیل مسئلے کے بارے میں کہ ناپاکی کی حالت میں صفا اور مروہ کی سعی کرسکتے ہیں کیا؟ بعض اردو فتاوی میں جائز لکھا ہے اور بعض میں ناجائز،اس سلسلے میں کیا صحیح ہے مدلل اور تشفی بخش جواب عنایت فرمائیں، بہت بہت مہربانی ہوگی۔

Published on: Dec 17, 2018

جواب # 166021

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 98-247/SN=4/1440



کن فتاویٰ میں جائز اور کن میں ناجائز لکھا ہے ان کا تفصیلی حوالہ درج کرنا چاہئے تھا؛ تاکہ مراجعت کی جاسکتی، بہرحال غنیة الناسک اور دیگر کتب فقہ میں یہ تصریح موجود ہے کہ ”سعی“ کے لئے جنابت یا حیض سے طہارت شرط نہیں ہے؛ اس لئے ناپاکی کی حالت میں سعی کرنا جائز ہوگا۔ ولایجب فیہ الطہارة عن الجنابة والحیض سواء کان سعي عمرة أو حج؛ لأنہ عبادة توٴدی لا فی المسجد الحرام الخ (غنیة الناسک، ص: ۱۷۵، ط: سہارنپور) ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات