عقائد و ایمانیات - حدیث و سنت

India

سوال # 69809

میرا سوال یہ ہے کہ کیا کوئی اس طرح کی حدیث ہے ؟ کامل مسلمان وہ ہے جو مسجد میں سب سے پہلے آئے اور سب سے بعد میں جائے منافق وہ ہے جو مسجد میں سب سے بعد آئے اور سب سے جلدی جائے ۔اگر ایسی کوئی حدیث ہے تو بتائیں اس کی سند کیسی ہے ؟اس مسئلہ کے بارے میں بتائیں۔ کسی آدمی کو کوئی بھی عذر نہیں ہے لیکن وہ کرسی پر نفل نماز پڑھتا ہے تو یہ کیسا ہے ؟

Published on: Oct 30, 2016

جواب # 69809

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 1162-1217/SN37=01/1438

(۱) اس مکمل سیاق کے ساتھ تو کوئی حدیث نہیں ملی؛ البتہ مسندِ احمد وغیرہ میں ایک روایت ہے جس میں اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم نے منافق کی علامات کے ضمن میں یہ بھی شمار فرمایا ”ولایأتون الصلاة إلا دبرا“ یعنی منافق نماز کے لیے اخیر میں آتا ہے، جب اس کا وقت جاتا رہتا ہے۔ مسندِ احمد کے محقق اور مخرج نے اس حدیث کو ”ضعیف“ قرار دیا۔ دیکھیں (مسند احمد، بہ تحقیق: شعیب الأرنووط، رقم: ۷۹۲۶۔ سند ابو ہریرة)۔

(۲) حقیقی رکوع سجدہ پر قدرت ہونے کے باوجود کرسی میں بیٹھ کر اشارے سے نفل نماز ادا کرنا بھی شرعاً جائز نہیں ہے، اس سے نماز ادا نہ ہوگی۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات