India

سوال # 168647

بچوں کی نظر اتارنے کے لیے مرچوں کے استعمال کے بارے بتائیں۔

Published on: Feb 21, 2019

جواب # 168647

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:557-442/sn=6/1440



 نظر اتار نے میں اس کا مفید ہونا اگر تجربات سے ثابت ہو تو دیگر طریقہ علاج کی طرح یہ طریقہ بھی اختیار کرسکتے ہیں، شرعا اس میں کوئی حرج نہیں ہے ۔



یستفاد مما روی ابن عباس عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم قال: العین حق فلوکان شیء سابق القدر سبقتہ العین وإذا استغسلتم فاغسلوا . رواہ مسلم. وقال الملا علی القاری فی شرحہ:...کانوا یرون أن یؤمر العائن فیغسل أطرافہ وما تحت الإزار، فتصب غسالتہ علی المعیون یستشفون بذلک، فأمرہم النبی - صلی اللہ علیہ وسلم - أن لا یمتنعوا عن الاغتسال إذا أرید منہم ذلک، وأدی ما فی ذلک دفع الوہم الحاصل من ذلک ، ولیس لأحد أن ینکرالخواص المودعة فی أمثال ذلک ، ویستبعدہا من قدرة اللہ وحکمتہ، لا سیما وقد شہد بہا الرسول - صلی اللہ علیہ وسلم - وأمر بہا (مشکاة المصابیح مع المرقاة، رقم:4531)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات